کراچی میں انتخابی نتائج کے خلاف جماعت اسلامی، پی ٹی آئی اور تحریک لبیک کا صوبائی الیکشن کمیشن آفس کے باہر احتجاج۔

عرفان علی عرفان علی

 کراچی میں انتخابی نتائج کے خلاف جماعت اسلامی، پی ٹی آئی  اور تحریک لبیک  کا صوبائی الیکشن کمیشن آفس کے باہر احتجاج۔


کراچی میں انتخابی نتائج کے خلاف جماعت اسلامی، پی ٹی آئی  اور تحریک لبیک  کا صوبائی الیکشن کمیشن آفس کے باہر احتجاج۔ جماعت اسلامی کا اتوار کو شہر  میں مختلف مقامات پر احتجاج کا اعلان۔  ریلی کی صورت میں الیکشن کمیشن  آنے کے لئے  نمائش چورنگی پر  جمع  ٹی ایل پی کے متعدد کارکن زیر حراست۔ لاٹھی چارج اور  آنسو گیس کا استعمال بھی کیا گیا۔

کراچی کے  انتخابی نتائج میں مبینہ دھاندلی کے خلاف احتجا ج کے لئے جماعت اسلامی ،پی ٹی آئی اور تحریک لبیک  کے کارکن  صوبائی الیکشن کمیشن آفس کے باہر  جمع ہوئے۔ اس موقع پر  الیکشن کمیشن آفس کے مرکزی دروازے کو  آہنی جنگلے لگا کر  بند کردیا گیا تھا اور  خواتین اہلکاروں سمیت  پولیس کی بھاری نفری بھی   تعینا ت تھی۔ تحریک لبیک  کے کارکن  ریلی کے لئے نمائش  چورنگی پر  جمع ہوئے،، تو پولیس  حرکت میں آئی ،، اور متعدد کارکنوں کو حراست میں لیا لے۔ لاٹھی چارج اور  آنسو گیس کا استعمال بھی کیا گیا۔ الیکشن کمیشن آفس پر مظاہرین سے خطاب میں  رہنما پی ٹی آئی آفتاب جہانگیر کا کہنا تھا کراچی کے مینڈیٹ کے ساتھ مذاق کیا گیا ہے ۔ اب ہماری یہ جنگ جاری رہے گی ۔ امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن  نے کہا عوام کے مینڈیٹ کی توہین کی گئی۔  درحقیقت  جماعت اسلامی  یا پی ٹی آئی کے   حمایت یافتہ امیدوار  کامیاب ہوئے۔ ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ احتجاج جاری رکھیں گے ۔ کل شام چار بجے  شہر بھر میں احتجاجی مظاہروں کا اعلان کرتے ہوئے،، کارکنوں کو منتشر ہونے کی  ہدایت کردی۔